سورۃ التوبہ کے اعداد وشمار، وجہ تسمیہ ومرکزی موضوع

سورۃ التوبۃ اعدادوشمار: مصحف کی ترتیب کے لحاظ سےنویں اور نزول کی ترتیب کے لحاظ سے 114ویں سورت ہے۔اس سورت میں 16رکوع،129آیات ،2506کلمات اور10837 حروف ہیں۔ تاریخ نزول: آیت نمبر 113 کے علاوہ باقی مکمل سورت مدنی ہے۔ بناء على ما ورد أنها نزلت في قوله صلّى الله عليه وسلّم لأبي طالب: «لأستغفرن لك ما مزید پڑھیں

سورۃ الانفال میں ذکر کردہ واقعات

1۔قرآن کریم کے حوالے سے نضر بن حارث وغیرہ نے کمنٹ کیا کہ “اگرہم چاہیں تو اس جیسا کلام لاسکتے ہیں،قرآن محض افسانوں ہی کی تو کتاب ہے!”(معاذ اللہ!) یعنی وہ قرآن کے ابدی حقائق ، اس کے علوم ودلائل اور اس کے اعجاز میں غور کرنے کی بجائے ،اسے صرف قصے کہانیوں کی کتاب مزید پڑھیں

سورۃ الانفال میں فتح ونصرت کے خدائی قوانین کا ذکر

فتح ونصرت کے خدائی قوانین مسلمان ان فارمولوں پر عمل کرلیں تو ان کواللہ تعالی کی غیبی مددونصرت حاصل ہوسکتی ہے: 1۔اپنے اندرتقوی یعنی خداخوفی پیدا کرلیں۔ تقوی کی برکت سے اللہ تعالی تمہیں ’’فرقان‘‘ دے گا۔تمہارے گناہوں کو دور کردے گا اور تمہیں بخش دے گا۔‘‘ فرقان کیا ہے؟ فرقان ایک وسیع مفہوم کا مزید پڑھیں

سورۃ الانفال اعداد وشمار، وجہ تسمیہ اور مرکزی موضوع

سورۃ الانفال اعداد وشمار: 8 عددسورت باعتبار مصحف 88غزوہ بدر کے فورا بعد عددسورت باعتبار نزول 9 اور10 عددپارہ 75 تعدادآیات 1243 الفاظ کی تعداد 5299 حروف کی تعداد وجہ تسمیہ: انفال جمع ہے نفل ،نفل کے معنی ہیں زیادتی ۔اصطلاح میں نفل یا انفال مال غنیمت کو کہاجاتا ہے جو جہاد کے موقع پر مزید پڑھیں

سورۃا لاعراف میں ذکر کردہ قرآنی دعائیں

1۔رَبَّنَا ظَلَمْنَا أَنْفُسَنَا وَإِنْ لَمْ تَغْفِرْ لَنَا وَتَرْحَمْنَا لَنَكُونَنَّ مِنَ الْخَاسِرِينَ [الأعراف: 23] اے ہمارے پروردگار ! ہم اپنی جانوں پر ظلم کر گزرے ہیں، اور اگر آپ نے ہمیں معاف نہ فرمایا اور ہم پر رحم نہ کیا تو یقینا ہم نامراد لوگوں میں شامل ہوجائیں گے۔ 2۔ رَبَّنَا لَا تَجْعَلْنَا مَعَ الْقَوْمِ الظَّالِمِينَ مزید پڑھیں

سورۃ الاعراف میں آیت سجدہ کی فضیلت

آیت سجدہ کے فضائل: آیت سجدہ پر سجدہ کرنے کے متعدد فضائل احادیث میں وارد ہوئے ہیں: 1۔ایک سجدہ کرنے پر جنت میں ایک درجہ بلند کردیا جاتا ہے۔ 2۔ایک گناہ معاف کیا جاتا ہے۔ 3۔بعض اوقات ایک درجہ بھی بلند کیا جاتا ہے اور ایک گناہ بھی معاف ہوتاہے۔ 4۔شیطان روتا ہے اور حسرت مزید پڑھیں

سورۃا لاعراف میں ذکر کردہ واقعات

متعدد انبیاء کرام علیہم السلام کے واقعات بھی اس سورت میں تفصیل سےبیان ہوئے ہیں : 1۔حضرت آدم علیہ السلام اور ابلیس کا واقعہ{ثُمَّ قُلْنَا لِلْمَلَائِكَةِ اسْجُدُوا لِآدَمَ فَسَجَدُوا إِلَّا إِبْلِيسَ لَمْ يَكُنْ مِنَ السَّاجِدِينَ} [الأعراف: 11] 2۔حضرت نوح علیہ السلام کاواقعہ ،ان کی قوم شرک میں مبتلاتھی ،ساڑھےنوسوسال دعوت دینے کے باوجود ایمان نہ مزید پڑھیں

سورۃ الاعراف میں حفظان صحت کے راہ نما اصول کا ذکر

آیت نمبر31 میں حفظان صحت کے حوالے سے ایک جامع کلام ارشاد ہوا ہے:کھاؤپیولیکن اسراف نہ کرو، بے شک اللہ تعالی اسراف کرنے والوں کو پسند نہیں کرتے“ فائدہ: اسراف کامعنی ہے: “حد سے بڑھنا، اعتدال کے خلاف کام کرنا”کھانے پینے میں بےاعتدالی اورحد سے بڑھنے کی کئی صورتیں ہیں: 1۔اتنا کھانا کہ پیٹ خراب مزید پڑھیں

سورۃا لاعراف میں ذکر کردہ متفرق احکام

متفرق 1۔اللہ تعالی کے حکموں سے نکلنے کے لیے حیلہ جوئی اور دھوکہ دہی سے کام لینا سخت گناہ ہے۔بنی اسرائیل اس گناہ کی پاداش میں خنزیر اور بندر بنادیے گئے۔{ وَاسْأَلْهُمْ عَنِ الْقَرْيَةِ الَّتِي كَانَتْ حَاضِرَةَ الْبَحْرِ إِذْ يَعْدُونَ فِي السَّبْتِ إِذْ تَأْتِيهِمْ حِيتَانُهُمْ يَوْمَ سَبْتِهِمْ شُرَّعًا وَيَوْمَ لَا يَسْبِتُونَ لَا تَأْتِيهِمْ } [الأعراف: مزید پڑھیں

سورۃ الاعراف میں دین کی دعوت دینے کا حکم

دعوت 1۔برائیوں سے روک ٹوک کرنا فرض ہے۔لوگ نہ مانیں تب بھی اس فریضے سے غفلت درست نہیں ہے۔{لِمَ تَعِظُونَ قَوْمًا اللَّهُ مُهْلِكُهُمْ أَوْ مُعَذِّبُهُمْ عَذَابًا شَدِيدًا قَالُوا مَعْذِرَةً إِلَى رَبِّكُمْ وَلَعَلَّهُمْ يَتَّقُونَ (164) فَلَمَّا نَسُوا مَا ذُكِّرُوا بِهِ أَنْجَيْنَا الَّذِينَ يَنْهَوْنَ عَنِ السُّوءِ وَأَخَذْنَا الَّذِينَ ظَلَمُوا بِعَذَابٍ بَئِيسٍ بِمَا كَانُوا يَفْسُقُونَ} 2۔داعی کا کام مزید پڑھیں